Zulmat kadah

imageDedicated to the death of humanity and morality of youth.

Saira Hafeez The-Writer

یہ جو سرخی ہے آج فلک پے چھائی سی
کس بے گناہ کی آج رسوائی ہے؟
یہ چراغوں کو کیا ہوااب سے
یہ تو جلنے سے ہی گریزاں ہیں
ان اندھیروں میں مشعلیں نہ روشن ہوں
کہ اب تو آنکھوں سے گئی بینائی بھی
ہمت اب نہ کرے کوئی
اس ظلمت کدئے کی  مسیحائی کی

ہم تو کاملِ علم ہیں
نہیں ضرورت کسی اہلِ رہنمائی کی
لکھیں تاریخ عقل کے پردوں پر
وجہ قوموں کی پسپائی کی
کیسے لکھیں کے انسانیت نہیں مری ابھی
اسہی بات سے ہوتی ہیے انسانیت کی رسوائی بھی

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s